ALL NEWS UPDATES ARE HERE

Canada On Barma




The Standard is located at East Village. This hotel is situated at 25 Cooper Sq, New York, NY 10003, USA. The hotel has beautiful view of New York City.

This hotel has 144 rooms and suits. The bed rooms have single double and triple bedrooms with attached washrooms. All the rooms are fully air conditioner.This hotel facilitates you with 24 Hour Reception. This hotel also accommodates with housekeeping service.



There is a restaurant in the hotel. The hotel has a bar.Every room has Coffee and Tea Maker tray and refrigerators. All the rooms are facilitated with color Television with all movie channels and news channels.The free internet service has been provided to all the rooms.






اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) ترک صدر رجب طیب اردگان کے بعد اب کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو بھی روہنگیا مسلمانوں کے لیے میدان میں آ گئے ہیں۔ ’دی گلوب اینڈ میل‘ کی رپورٹ کے مطابق جسٹن ٹروڈو نے کہا ہے کہ ”ہمیں میانمار میں روہنگیا مسلمانوں پر ہونے والے مظالم پر سخت تحفظات ہیں۔ جون میں میانمار کی لیڈر آنگ سان سوچی سے اوٹاوا میں میری ملاقات ہوئی تھی اور میں نے ان کے سامنے روہنگیا مسلمانوں کی حالت زار کا مسئلہ اٹھایا تھا۔ان مسلمانوں کی ناگفتہ بہ صورتحال پر کینڈا کے شہری دل گرفتہ ہیں اور اس مسئلے کا فوری

حل چاہتے ہیں۔“جسٹن ٹروڈوکا مزیدکہنا تھا کہ ”ہم میانمار کی حکومت اور تمام حکام پر دباؤ ڈال رہے ہیں کہ وہ جان بچا کر میانمار سے فرار ہونے والے روہنگیا مسلمانوں کو اس صورتحال سے نکالنے کے لیے پختہ اقدامات کریں۔ اگرچہ ہمیں میانمار کی صورتحال پر سخت تحفظات ہیں لیکن میں ابھی کچھ نہیں کہہ سکتا کہ آنگ سان سوچی کی کینیڈا کی اعزازی شہریت ختم کی جا ئے گی یا نہیں۔“ دوسری طرف کینیڈا کی وزیرخارجہ کرسٹیا فری لینڈ کا کہنا ہے کہ ”جس طرح روہنگیا مسلمانوں کے میانمار کا شہری ہونے سے انکار کیا جا رہا ہے اور انہیں ملک سے نکل جانے پر مجبور کیا جا رہا ہے اس سے آنگ سان سوچی کاجمہوری ویژن کمزور ہو رہا ہے جس کے لیے انہوں نے تمام عمر جنگ لڑی ہے۔کینیڈا کی حکومت میانمار کے تمام حکام سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہ تمام شہریوں کو جاری پرتشدد واقعات سے محفوظ رکھنے کے لیے مل کر کام کریں۔“جبکہ دوسری جانب میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کی مبینہ نسل کشی کے خلاف نیویارک میں اقوام متحدہ کی عمارت اور واشنگٹن میں برما کے سفارتخانے کے باہر احتجاجی مظاہرے کئے گئے، جس میں مظاہرین نے نسل کشی بند کرنے اور اسے دہشت گردی قرار دینے کا مطالبہ کیا۔میڈیارپورٹس کے مطابق میانمار کی حکومت کے خلاف ان مظاہروںکا اہتمام امریکی مسلمانوں کی مختلف تنظیموں نے کیا تھا، جنہوں نے جمعہ کو بھی یہ مظاہرے جاری رکھے ،واشنگٹن میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب میں انسانی حقوق کی عالمی تنظیم 'کیئر انٹرنیشنل کے ڈائریکٹر نہاد اعواد نے الزام عائد کیا کہ برما کی حکومت روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی میں ملوث ہے۔ انھوں نے مطالبہ کیا کہ عالمی ضمیر برما کو اس نسل کشی سے روکے۔نہاد اعواد نے امریکی شہریوں کو مشورہ دیا کہ وہ ٹرمپ انتظامیہ، منتخب نمائندوں اور انسانی حقوق کی تنظیموں سے رابطہ کریں اور ان سے مطالبہ کریںکہ برما حکومت کے خلاف کارروائی کی جائے۔انھوں نے میانمار حکومت سے مطالبہ کیا کہ روہنگیا مسلمانوں کے تحفظ کے لئے اقدامات کرے اور انھیں مساوی شہری حقوق دے۔مظاہرین نسل کشی بند کرو، نسل کشی دہشت گردی ہے، اورہمیں کیا چاہیے انصاف، انصاف کے نعرے لگارہے تھے۔انھوں نے ڈیرھ سے دو گھنٹے تک برما کے سفارتخانے کے اطراف میں مظاہرہ جاری رکھا۔







The hotel accommodates with laundry services and dry cleaning facility.The staff of the hotel is friendly and multilingual.

There are business centers. The staff can help you managing a conference here if you want. The hotel can accommodate you with tourist information if you want. You can also rent bike from the hotel. The hotel accommodates with paid parking for the guests.


There are many attractive places in the surrounding of the hotel. This hotel is so close to the Central Park. The Standard hotel is at walking from Merchant’s House Museum. The Orpheum Theater is also at 5 minutes walking distance. The Tompkins Square Park is so close to the hotel. There is a fitness center nearby the hotel. The hotel charges are from $311 to $843.



No comments:

Note: only a member of this blog may post a comment.

Powered by Blogger.