ALL NEWS UPDATES ARE HERE

PAKISTAN FOR DEFENCE




The Standard is located at East Village. This hotel is situated at 25 Cooper Sq, New York, NY 10003, USA. The hotel has beautiful view of New York City.

This hotel has 144 rooms and suits. The bed rooms have single double and triple bedrooms with attached washrooms. All the rooms are fully air conditioner.This hotel facilitates you with 24 Hour Reception. This hotel also accommodates with housekeeping service.



There is a restaurant in the hotel. The hotel has a bar.Every room has Coffee and Tea Maker tray and refrigerators. All the rooms are facilitated with color Television with all movie channels and news channels.The free internet service has been provided to all the rooms.






اسلام آباد (آئی این پی) سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے دفاعی پیداوار نے گوادر میں شپ یارڈ کے قیام کے حوالے سے حکو مت کو سمری پر کام تیز کرنے اور گوادر شپ یارڈ کے لئے 2000ایکڑ زمین ایکوائر کرنے کی سفارش کردی، کمیٹی نے دفاعی پیداوار صنعت اور اس سے ملحقہ اداروں کی کارکردگی کی تعریف کی جبکہ کمیٹی چیئرمین لیفٹیننٹ جنرل(ر) سینیٹر عبدالقیوم نے کہا کہ دفاعی پیداوار کی صنعت پیسہ بنانے والی صنعت ہے۔کئی ممالک اس صنعت کے ذریعے بڑی آمدن کما رہے ہیں اورسماجی اور معاشی شعبوں کو سپورٹ فراہم کرتے ہیں، پاکستان کے پاس 1947میں

آرڈیننس فیکٹری نہیں تھی لیکن اب تقریباً اسلحہ سازی ودیگر ہتھیار بنانے میں 90فیصد خود کفیل ہو چکا ہے۔بدھ کو سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے دفاعی پیداوار کا اجلاس کمیٹی چیئرمین سینیٹر لیفٹیننٹ جنرل(ر) عبدالقیوم کی زیر صدارت ہوا۔ اجلاس میں کمیٹی نے گوادر شپ یارڈ کے حوالے سے سمری پر کام تیز کرنے کی ہدایت کی اور سفارش کی کہ گوادر شپ یارڈ کے لئے 2000ایکڑ زمین ایکوائر کی جائے، پاکستان آرڈیننس فیکٹری کے حکام نے کمیٹی کو آگاہ کیا کہ پی او ایف 2014سے تقریباً50ملین ڈالر کی ایکسپورٹ کر رہی ہے۔ وفاقی وزیر برائے دفاعی پیداوار رانا تنویر حسین نے کہا کہ پی او ایف کی جانب سے کوششیں بڑی پائیدار ثابت ہو سکتی ہیں، اگر وزارت کی جانب سے پیش کی گئی بجٹ تجاویز پر عمل کرلیا جائے۔ انہوں نے کمیٹی سے درخواست کی کہ وزارت کا بجٹ بڑھانے کیلئے تعاون فراہم کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ 2016-17میں پی او ایف کی تجارتی آمدن 11.8ارب رہی ہے۔ کمیٹی چیئرمین نے کہا کہ دفاعی پیداوار کی صنعت پیسہ بنانے والی صنعت ہے اور کئی ممالک اس صنعت کے ذریعے بڑی آمدن کما رہے ہیں، سماجی اور معاشی شعبوں کو سپورٹ فراہم کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے پاس 1947میں آرڈیننس فیکٹری نہیں تھی لیکن اب تقریباً اسلحہ سازی، ہتھیار بنانے میں 90فیصد خود کفیل ہو چکا ہے،پاکستان ایروناٹیکل کمپلیکس کے حکام نے کمیٹی کو آگاہ کیا کہ ادارے کو 15ارب بجٹ مختص کیا گیا تھا اور کئی منصوبوں پر کام کیا ہے، جن میں جے ایف 17ایئر کرافٹس، مشتاق ایئر کرافٹس اور دیگر کئی مقامی تجارتی منصوبے شامل ہیں۔کمیٹی نے پی اے سی کامرہ کی کامیابیوں کو سراہا۔ کراچی شپ یارڈ کے حکام نے کمیٹی کو آگاہ کیا کہ یہ ادارہ پاکستان نیوی کے تحت کام کرتا ہے اور کثیر ریونیو کماتا ہے۔نیشنل ریڈیو اینڈ ٹیلی کمیونیکیشن کارپوریشن(این آر ٹی سی)کے حکام نے کمیٹی کو آگاہ کیا کہ ادارے نے 2016-17میں 10151ملین کی سیل کی۔ ارکان کمیٹی اور چیئرمین کمیٹی نے دفاعی پیداوار صنعت اور اس سے ملحقہ اداروں کی جانب سے خدمات کی تعریف کی۔ کمیٹی نے سفارش کی کہ دفاعی پیداوار کی صنعت کی جانب سے برآمدات پر ڈیوٹی کم کی جائے تا کہ مقامی اور بین الاقوامی مارکیٹ میں اشیاء کی لاگت مقابلاتی رہے






The hotel accommodates with laundry services and dry cleaning facility.The staff of the hotel is friendly and multilingual.

There are business centers. The staff can help you managing a conference here if you want. The hotel can accommodate you with tourist information if you want. You can also rent bike from the hotel. The hotel accommodates with paid parking for the guests.


There are many attractive places in the surrounding of the hotel. This hotel is so close to the Central Park. The Standard hotel is at walking from Merchant’s House Museum. The Orpheum Theater is also at 5 minutes walking distance. The Tompkins Square Park is so close to the hotel. There is a fitness center nearby the hotel. The hotel charges are from $311 to $843.



No comments:

Note: only a member of this blog may post a comment.

Powered by Blogger.